Official Website of Allama Iqbal
  bullet سرورق   bullet سوانح bulletتصانیفِ اقبال bulletگیلری bulletکتب خانہ bulletہمارے بارے میں bulletرابطہ  

تاریخی درسگاہ جامعہ محمدیہ چنیوٹ میں اقبال اور تصوف سیمینار کا انعقاد

پاکستان کی تاریخی درسگاہ جامعہ محمدیہ چنیوٹ میں ۸ اکتوبر ۲۰۲۲ء کو اقبال اور تصوف سیمینار منعقد کیا گیا جس میں اقبال اکادمی پاکستان سے ڈاکٹر طاہر حمید تنولی نے موضوع پر گفتگو کی۔ انہوں نے تصوف کی تاریخ بیان کرتے ہوئے تصوف کی تعلیمات کی تفہیم، وضاحت، اصلاح اور فروغ میں علامہ اقبال کے کردار کی وضاحت کی۔ انہوں نے کہا کہ تصوف ہماری تاریخ میں مسلم معاشرے کی صورت گری کرنے والا اہم شعبہ رہا ہے۔ تاہم دور زوال میں پیدا ہونے والے دیگر فتنوں اور خرابیوں کی طرح تصوف کا شعبہ بھی بتدریج اپنے کردار کی ادائیگی میں ماضی کی طرح موثر نہیں رہا۔
انہوں نے کہا کہ علامہ اقبال نے دور جدید کے علمی، تہذیبی اور ثقافتی مسائل کا ذکر کرتے ہوئے جن اصلاحی اقدامات کی نشاندہی کی ہے ان کے ذریعے تصوف کے موثر کردار کو پھر زندہ کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ علامہ اقبال نے نہ صرف اپنی شعری تحریروں بلکہ نثری تحریروں میں بھی تصوف کی تعلیمات کی قومی زندگی کو درپیش سوالات کے ساتھ ربط کی وضاحت کی ہے ۔ علامہ اقبال نے اپنے شہرہ آفاق خطبات تشکیل جدید الہیات اسلامیہ کے سات خطبات میں سے تین خطبات براہ راست تصوف کے مختلف موضوعات پر دیئے۔
آج ہمارے معاشرے کو جس اخلاقی احیاء کی ضرورت ہے وہ تصوف کے موثر کردار کو زندہ اور فعال کئے بغیر ممکن نہیں اور اس مقصد کے حصول کے لیے علامہ اقبال کی تعلیمات واضح راہنمائی فراہم کرتی ہیں۔ سیمینار میں جامعہ محمدیہ کے ناظم اعلی، اساتذہ، طلباء اور عمائدین نے شرکت کی۔

اقبال اکادمی پاکستان